Breaking News

نورمقدم کیس میں تہلکہ خیز موڑ آگیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ایڈیشنل اینڈ سیشن جج عطاء ربانی نے چارج شیٹ کی بنیاد پر 12ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی ہے۔نورمقدم  کیس کی چارج شیٹ میں بتایا گیا ہے کہ مرکزی ملزم ظاہر جعفر نےاس کو18سے 20جولائی تک تین دن تک حبس بے جا میں رکھا، ظاہر جعفر کے والدین نے سب کچھ جانتے ہوئے بھی پولیس کو اطلاع نہیں دی ۔

 نجی ٹی وی نے چارج شیٹ کے حوالے سے بتایا کہ 12ملزمان پر مجموعی طورپر 14الزامات عائد کیے گئے ہیں، چارج شیٹ کے مطابق نور مقدم نے 20جولائی کو کھڑکی سے چھلانگ لگا کر بھاگنے کی کوشش کی لیکن گارڈ افتخار اور مالی جان محمد نے اسے گیٹ پر روک لیا، اس کے بعد ملزم ظاہر نور کو کھینچتا ہوا دوبارہ کمرے کے اندر لے گیا۔مرکزی ملزم ظاہر جعفر کے بارے میں عدالت نے کہا کہ اس پر نور مقدم کی جان لینے، اغو اء، ا اور زیا دتی سمیت دیگر الز امات ہیں، ملزم کے والدین کراچی سے اس سے ٹیلی فون پر رابطے میں تھے، نور کو حبس بے میں رکھنے کا علم ہونے کے باوجود پولیس کو اطلاع نہیں دی ، اس لیے وہ بھی شریک ملزم قرار پائے، خانسامے اور مالی سمیت یہ لوگ ظاہر کے منصوبے سے واقف تھے ، انہیں پولیس کی مدد کرنی چاہیے تھے جو انہوں نے نہیں کی ۔ یادرہے کہ اس سے قبل یہی کہا جا رہا تھا کہ نور دن کے وقت گھر سے نکلی اور پھر نمبر بند تھے، بعد میں پتہ چلا کہ وہ لاہور جا رہی ہیں لیکن رات کو پولیس کی کال موصول ہوئی او نور کے والد موقع پر پہنچے تو پتہ چلا کہ ان کی بیٹی کا مر ڈر ہوچکا ہے لیکن چارج شیٹ کے مطابق وہ تین دن سے حبس بے جا میں تھی ۔

About admin

Check Also

استقبال کی تیاریاںشروع۔۔ نواز شریف کب وطن واپس پہنچ رہے ہیں؟ اہم اعلان کر دیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل بھی مسلم …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *