Breaking News

سپریم کورٹ کا بڑا فیصلہ! شوگر ملز کو کتنے روپے پر چینی فروخت کرنے کی مشروط اجازت دیدی ؟بڑی خبر

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چینی کی قیمت مقرر کرنے سے متعلق حکومتی اپیل پر کیس کی سماعت ہوئی جس دوران عدالت نے کہا کہ حکومت اور ملز کے ریٹ میں فرق پر مبنی رقم ہائیکورٹ میں جمع ہو گی ، شوگر ملز ایکس مل ریٹ میں فرق پر مبنی رقم رضاکارانہ طور پر جمع کرائیں ۔

سپریم کورٹ نے شوگرملز کو 97 روپے ایکس مل ریٹ پر چینی فروخت کرنے کی مشروط اجازت دیتے ہوئے کیس لاہور ہائیکورٹ کو واپس بھجوا دیا ہے، عدالت عظمیٰ نے ہائیکورٹ کو درخواستوں پر 15 روز میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا ہے۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت میں بتایا کہ حکومت کاایکس مل ریٹ 84،شوگرملزکا 97 روپے ہے، عدالت نے کہا کہ شوگر ملز کی طرف سے صرف مچلکے جمع کرنا کافی نہیں۔ عدالت کا کہناتھا کہ متعلقہ کین کمشنرچینی کے سٹاک اورفروخت کاریکارڈمرتب رکھیں،لاہورہائیکورٹ میں چینی کی قیمت کاکیس زیر التوا ہے۔عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہائیکورٹ نے مقررہ قیمت کیخلاف یکطرفہ حکم امتناع جاری کیا،عدالت کی ذمہ داری ہے قانونی نقطے پرفیصلہ کرے، قیمتوں،نفع نقصان کاتعین کرناعدلیہ کی ذمہ داری نہیں، قیمتوں کے معاملےمیں مداخلت غیرمتعلقہ حدودمیں داخلے کے مترادف ہے،عدالت عدلیہ کی غیرمتعلقہ حدودمیں مداخلت شرمندگی کاباعث بنتی ہے۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ حکومت نے چینی کی ایکس مل قیمت مقرر کی تھی،جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ کیا حکومت کے پاس چینی کی قیمت مقرر کرنے کا مکمل اختیار ہے؟چینی کی قیمت کا تعین فارمولہ کے تحت ہوتا ہے،شوگر ملز کا موقف ہے حکومت نے 104 روپے پر چینی امپورٹ کی، امپورٹ کی گئی چینی حکومت سبسڈی دے کر 89 روپے میں فروخت کرے گی، بات درست ہے یا غلط مگر عدالت نے اپنے اختیارات کو دیکھنا ہے، جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ لاہور ہائیکورٹ کا عبوری حکم ختم کرکے کیس ریمانڈ کریں گے ۔

About admin

Check Also

دنیا کی نظروں میں قبضہ مافیاکہلانے والاتاجی کھوکھر درحقیقت ایک کیسا انسان تھا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)اسلام آباد کی معروف کاروباری شخصیت اور سابق رکن قومی اسمبلی حاجی نواز …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *