Breaking News

بڑی خبر: 80 کلومیٹر کا سفر صرف 15 روپے میں کرنے والی نئی موٹر سائیکل مارکیٹ پہنچ گئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان کے صوبہ پنجاب میں بجلی سے چلنے والی موٹر سائیکل بننا شروع ہو گئی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بجلی سے بننے والی موٹر سائیکل میں کوئی چین، گراری سیٹ نہیں، گئیر، کک، گئیر لیور اور موبائل آئل بھی شامل نہیں ہیں ۔ اس بائیک کو ساہیوال میں روایتی پیٹرول بائیک کو الیکٹرک بائیک بنایا جارہا ہے۔

کمپنی کیسینئر عہدیدار عثمان شیخ کا کہنا تھا کہہم پاکستان میں الیکٹرک بائیک تیار کرنے والی پہلی کمپنی ہیں جس نے اپنے ڈیزائن خودسے تیار کیا ہے۔حتی کہ ہم نے کنٹرولر، بیٹری سسٹم، چارجر،موٹر اور بیٹری پیک تک خود ڈیزائن کیے ہیں۔ اس حوالے سے چئیرمین ایم ایس گروپ چوہدری زاہد نے کہا ہے کہ پٹرول سے چلنے والی موٹرسائیکل کا اگر ماہانہ خرچہ 4000 ہے اس موٹرسائیکل سے خرچہ کم ہوکر 500 روپے ماہانہ ہوجائے گا۔اس موٹرسائیکل کی ایک خوبی یہ ہے کہ اس موٹرسائیکل میں کوئی چین، گراری، کک، گئیرلیور نہیں ہے اور نہ ہی موبل آئل ڈلوانے کی ضرورت پیش آئے گی۔ ان کا کہنا تھاکہ اسے گرین ٹیکنالوجی کہا جاتا ہے۔اس میں ایک تو دھواں اور آلودگی نہیں ہے جبکہ یہ بائیک شور بھی نہیں کرتی۔جی ہاں اب 80 کلومیٹر کا سفر صرف پندرہ روپے میں کرنے والی نئی موٹر سائیکل مارکیٹ پہنچ گئی ہے۔ واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ نئی نسل کے مستقبل کے لیے منصوبہ بندی کرنا ہو گی۔ ماحولیاتی آلودگی انسانی زندگی کے لیے مسئلہ بن چکی ہے۔ ماحولیات میں بہتری کے لیے ہمیں الیکٹرک گاڑیاں لانا ہوں گی۔ پاکستان کی پہلی ماحول دوست الیکٹرک موٹرسائیکل (ای بائیک) کا افتتاح کرنے کے بعد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیرا عظم عمران خان نے کہا۔

کہ الیکٹرک موٹرسائیکل منصوبہ خوش آئند ہے الیکٹرک وہیکل پالیسی کے تحت روزگار فراہم ہو گا۔خوشی ہے الیکڑک وہیکلز سے نئی صنعت جنم لے گی۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کی معاشی ترقی کے لیے طویل المدتی منصوبہ بندی ضروری ہے اور الیکٹرک وہیکل کی حوصلہ افزائی کلین اینڈ گرین مہم ہے ہم درخت لگا رہے ہیں اور نیشنل پارکس بنا رہے ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ مفادات کے لیے پالیسیاں بنانے سے ملک کو نقصانہوتا ہے ہم شہروں کے لیے ماسٹر پلان بنا رہے ہیں جبکہ ہم نے پانی کی ری سائیکلنگ پر بھی کام کرنا ہے۔ لاہور میں ماحولیاتی آلودگی انسانی زندگی کے لیے مسئلہ بن چکی ہے۔ لاہور کو باغوں کا شہر کہا جاتا تھا لیکن آج وہاں آلودگی ہے۔ پاکستان بے شمار وسائل اور نعمتوں سے مالامال ہے۔عمران خان نے کہا کہ ہمیں اپنی سوچ بدلنی ہےاور آئندہ نسلوں کے بارے میں سوچنا ہے۔ خوشی ہے ماحولیاتی تبدیلی کے لیے اقدامات کو دنیا تسلیم کر رہی ہے اور ماحولیات میں بہتری کے لیے ہمیں الیکٹرک گاڑیاں لانا ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ جب بھی ملک پر مشکل وقت آیا قوم نے خود ہی اپنے لوگوں کی مدد کی۔ اب ہمیں ٹیکس دہندگان کا اعتماد بحال کرنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں یہ سوچبھی تبدیل کرنا ہو گی کہ امداد نہیں ملے گی تو ملک نہیں چلے گا۔ میرا یقین ہم اپنے پیروں پر کھڑے ہو کر اپنے مسائل حل کریں گے تو مضبوط ہوں گے۔

About admin

Check Also

سونے کی قیمت میں تاریخی کمی سونا کتنا اورنیچے جائے گا یہ جان کر کنواروں کی عید ہو جائے گی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی سونے کی قیمت کی وجہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *