Breaking News

کیا آپ جانتے ہیں کہ مُردے کو اکیلا کیوں نہیں چھوڑنا چاہئے؟پاکستانی مسلمان ضرور جان لیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)جیسا کہ ہم سب ہی جانتے ہیں کہ مرنے کے بعد ، ہم جو کام جلد سے جلد انجام دیتے ہیں وہ مردہ جسم کی آخری رسوم کا ہوتا ہے۔ایسی صورتحال میں اکثر لوگ صبح ہونے کا انتظار کرتے ہیں اور مردے کو اپنے گھر وں میں یا ہسپتال کے سرد خانے میں رکھوا دیتے ہیں۔ لیکن اگر ایسی صورتحال پیدا ہوجائے کہ سرد خانے میں مردہ جسم رکھنے کی جگہ نہ ہواور اسے گھر کے کسی کمرے میں رکھ دیا جائے تو کیا مردہ جسم کو اکیلا چھوڑا جا سکتا ہے؟ڈیلی ہنٹ ویب سائٹ کے مطابق یہ عملکئی افرادکے لئے قدرے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے یہ بات کچھ عجیب سی ضرور ہے لیکن یہ سچ ہے۔ کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ اس کے پیچھے کوئی سائنسی وجہ ہو سکتی ہے تو کچھ اپنے اپنے نظریات رکھتے ہیں۔ماہرین کے مطابق ، اگر غروب آفتاب کے بعد کوئی موت واقع ہو جاتی ہے تو پھر ایسے شخص کے جسم کو ہربل پودوں کے ساتھ حفاطت کے ساتھ رکھنا چاہئے۔دوسری جانب ماہرین اس حوالے سے تجویز پیش کرتے ہیں کہ مردہ شخص کے جسم کو تنہا نہیں چھوڑنا چاہئے بلکہ اسے اس کے قریبی فرد کے ساتھ رکھنا چاہئے جو اس کو اچھی جانتا ہو۔ویب سائٹ کے مطابق اس کی وجہ یہ بتائی گئی ہے کہ اس کی روح وہاں بھٹکتی ہے اور آپ سب کو دیکھتی رہتی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ موت کے بعد ، جسم خالی ہوجاتا ہے اور اس پر کسی دوسری بری روح پر اپنا حق جما سکتی ہے۔جبکہ دوسری طرف جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو طبیعت خراب ہونے کے باعث کراچی کے ہسپتال میں داخل کرا دیا گیا ہے۔ ہسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ انھیں انتہائی نگہداشت وارڈ میں رکھا گیا ہے

About admin

Check Also

بھوکی لڑکی۔۔۔۔؟؟

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) اس کی خوبصورتی کا پورے محلے چرچاتھا جب کبھی بھی خوبصورت بچیوں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *