Breaking News

استعفوں سے انکار کے بعد پیپلز پارٹی کا ایک اور بڑا فیصلہ مولانا فضل الرحمن اور نواز شریف ہاتھ ملتے رہ گئے

استعفوں سے انکار کے بعد پیپلز پارٹی کا ایک اور بڑا فیصلہ فضل الرحمن اور نواز شریف ہاتھ ملتے رہ گئے

اسلام آباد (آن لائن ) پاکستان پیپلز نے سینٹ میں اپنا اپوزیشن لیڈر لانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ ذزرائع کے مطابق اس سلسلسے میں عوامی نیشنل پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کی جانب سے پیپلزپارٹی کو حمایت کی یقین دہانی کروائی گئی ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کے پاس سینیٹ میں اپنے 21 ووٹ ہیں جب کہ اے این پی اور بی این پی مینگل کے سینیٹ میں 2،2 ارکان ہیں۔ ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کی جانب سے شیری رحمان کو اپوزیشن لیڈر نامزد کئے جانے کا امکان ہے

اور پیپلز پارٹی 25 سینٹرز کے دستخط والی درخواست چند روز میں سینٹ سیکرٹریٹ میں دے گئی۔دوسری جانب پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن اور مسلم لیگ ن کے قائد نوازز شریف کا ٹیلیفونگ رابطہ ہوا ہے ۔ دونوں رہنمائوں نے گذشتہ روز ہونے والے پی ڈی ایم سربراہی اجلاس میں آصف زرداری کے رویہ پر دکھ کا اظہارکیا اور آئندہ کی حکمت عملی پر غوروغوض کیا گیا اور حکومت کو ٹف ٹائم دینے پر اتفاق کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق دونوں قائدین کے درمیان سابق صدرآصف زرداری اور مسلم لیگ ن کے مرکزی نائب صدر اور سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نوازز کے درمیان پی ڈی ایم سربراہی اجلاس میں ہونے والی تلخ گفتگو پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ مولانا فضل الرحمن اور نواز شریف نے آئندہ کی حکمت عملی پر بھی غور کیا ۔ نواز شریف نے کہا ہے کہ آصف زرداری کی ایسی گفتگو سے دکھ اور تکلیف پہنچی ہے ۔ ہم 90کی دہائی کی سیاست دفن کر کے آگے بڑے تھے پھر الزام تراشی کیوں کی گئی؟ جس کے جواب میں پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ مجھے خود آصف علی ذرداری کے غیر جمہوری رویے سے دکھ ہوا ہے۔

About admin

Check Also

عمرشریف شدید علیل! مگر بیماری کے باوجوداپنی تیسری بیوی کے خلاف عدالت کیوں چلے گئے؟ وجہ جان کر یقین نہ آئے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) لیجنڈری کامیڈین عمر شریف جو کہ ان دنوں شدید علیل ہیں اور …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *